jab ishq sikhata hai ghazal by Allama Iqbal in urdu

جب عشق سکھاتا ہے آدابِ خود آگاہی
کھلتے ہیں غلاموں پر اسرارِ شہنشاہی
عطٓار ہو ، رومٓی ہو ، رازٓی ہو ، غزٓالی ہو
کچھ ہاتھ نہیں آتا بے آہِ سحر گاہی
نومید نہ ہو ان سے رہبرِ فرزانہ !
کم کوش تو ہیں لیکن بے زوق نہیں راہی
اے طاہرِ لا ہوتی اس رزق سے موت اچھی
جس رزق سے آتی ہو پرواز میں کوتاہی
دارا و سکندر سے وہ مردِ فقیر اَولٰی
ہو جس کی فقیری میں بوئے اسَد ا للًہی
آئینِ جواں مرداں حق گوئی و بے باکی
اللّٰہ کے شیروں کو آتی نہیں رُوباہی

Jab Ishq Sikhata hai Ghazal in English

When love teaches self-awareness
The mystery of the empire unfolds over the slaves
Be it perfume, be it Roman, be it Razi, be it Ghazali
Nothing comes of it

Don’t despair of them, Farzana’s leader!
There is little effort, but it is not in vain
O Tahir, death is better than this provision
Failure to fly from the source of income
From Darius and Alexander, the poor man
Be the one in whose poverty Asad Allah sowed
The constitution of young men is truthful and honest
The lions of Allah do not come face to face

read the ghazal of Allama Iqbal pooch us sy k Maqbool hai first

Translation in Urdu poem

1. جب عشق انسان کو خودی کی پہچان کے طور طریقے سکھاتا ہے تو غلاموں پر شہنشاہی کے بھید ظاہر ہونے لگتے ہیں یعنی نفس کی پہچان اور ذات کی معرفت سے انسان باخبر ہو جاتا ہے تو وہ اپنی عظمت و سر بلندی کا سامان کر لیتا ہے یعنی عشق عاشق کو خودی کے آداب و قواعد سکھا کر غلام سے بادشاہ بنا دیتا ہے ۔

2۔ خواجہ فریدالدین عطار رحمۃ اللّٰہ علیہ ہوں یا مولانا روم رحمۃ اللّٰہ علیہ ہوں ، امام رازی رحمتہ الله علیہ ہوں یا امام غزالی رحمتہ الله علیہ ، تنہا علم سے کوئ معرفت کے درجے پر نہ پہنچا اور صبح کے وقت کی آہ فریاد کے بغیر کسی کو کچھ نہ مل سکا ۔ مطلب یہ کہ عشق کے بغیر زندگی میں گوہر مقصود ہاتھ نہیں آتا ۔

3 ۔ اے دانا رہنما ! تیرے پیچھے پیچھے جو لوگ چلے آ رہے ہیں ، ان سے مایوس یا نا امید نہ ہو ۔ وہ سست ، کم عقل اور راحت طلب تو ضرور ہیں لیکن ان کے دل زوق و شاق سے خالی نہیں ۔

یہ بھی مسلمانوں کی حالت بتائ گئ ہے یعنی ان میں بہت کی سی جفا کشی تو موجود نہیں تاہم وہ زوق و شوق سے محروم نہیں ہیں ۔ ان کے دلوں میں عشق رسول صلی الله علیہ والہ وسلم کی تڑپ باقی ہے ۔ ان میں گرمئ عمل پیدا کی جا سکتی ہے ۔

explanation in urdu

4 ۔ اے مسلمان ! تو لاہوت یعنی مقام ذات الٰہی کا پرندہ ہے ۔ تجھے اُڈ کر اس مقام پر پہنچنا ہے جس روزی سے تیری اُڈان میں کمزوری آتی ہو اس پر زندگی بسر کرنے سے موت بہتر ہے ۔

انسان کےلیے اس دنیا میں سب سے بڈی آزمائش رزق کی ہے اس کی خاطر اکثر لوگ اپنے اصولوں کو چھوڑ دیتے ہیں لیکن جو رزق انسان کو راہِ حق سے گمراہ کردے تو اسے قبول کرنے کے بجائے مر جانا بہتر ہے ۔

5 ۔ جس درویش کی درویشی میں حضرت علی المرتضٰی رضی اللّٰہ عنہ کی جھلک یا خوشبو نمایاں ہو ، وہ درویش دارا اور سکندر جیسے بادشاہوں سے افضل ہے ( اس کا مرتبہ اونچا ہے ) جو فقیر حضرت حیدرِ کرار رضی الله عنہ کی راہِ فقر پر گام زن ہو اس کا مقام بادشاہوں سے بھی بلند تر ہوتا ہے

6 ۔ جوانمردوں کا طور طریق یہ ہے کہ سچی بات کہیں اور کسی سے نہ ڈریں ۔ وہ اللّہ کے شیر ہیں ، انہیں لومڑی کے طور طریق یعنی خوشامد اور مکاری نہیں آتی ۔ مطلب یہ کہ مومن ہمیشہ راست گو اور بے خوف ہوتے ہیں ۔ ان میں چاپلوسی اور مکروفریب کی بُری عادتیں نہیں ہوتیں ۔

read Allama Iqbal book baal e jibraeil

Jab Ishq Sikhata hai poem Translation in english

When love teaches man the ways of self-identification, then the secrets of empire begin to appear on the slaves, that is, man becomes aware of the identity of self and caste, then he attains the height of his greatness and dignity, ie love. He makes the lover a king from a slave by teaching him the manners and rules of the self.

Whether it is Khawaja Farid-ud-Din Attar (may Allah have mercy on him) or Maulana Rome (may Allah have mercy on him), Imam Razi (may Allah have mercy on him) or Imam Ghazali (may Allah have mercy on him), no one has reached the level of knowledge by knowledge alone. Could not be found. This means that without love, Gohar Maqsood cannot be achieved in life.

O wise leader, do not despair or despair of those who are following you. They are lazy, lacking in intellect, and seeking comfort, of course, but their hearts are not empty.

This is also the Muslims’ condition; that is, they do not have a lot of persecution, but they are not deprived of pleasure. The longing for the love of the Prophet (peace and blessings of Allaah be upon him) remains in their hearts. They can generate heat.

O Muslim, you are a bird of Lahoot, the place of the Divine Essence. You have to fly to the place where your flight is weakened. Death is better than living on it.
Explanation in English

The greatest test for man in this world is the provision, for which most people give up their principles, but it is better to die than to accept the provision which leads man astray from the path of truth.

The dervishes whose dervishes have a glimpse or fragrance of Hazrat Ali Al-Murtada (may Allah be pleased with him) are superior to kings like Darius and Alexander (his rank is high) who follow in the footsteps of the poor Hazrat Haider Karar (may Allah be pleased with him). His position is higher than that of kings.

The way of men is to speak the truth and not be afraid of anyone. They are the lions of Allah; they do not know the way as a fox, that is, flattery and cunning. This means that believers are always honest and fearless. They do not have bad habits of flattery and macro-fraud.

 

Published by allamaiqbal

I am Sabraiz, WordPress and SEO Expert. I love Allama Iqbal's poems, ghazals, and Poetry. You can message me through the contact us page for any query. I would love to answer it!

Leave a comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *